Lailatul Qadr History Complete PDF Book Download

Lailatul Qadr History Complete PDF Book Download

Lailatul Qadr History Complete PDF Book DownloadLailatul Qadr History Complete PDF Book Download

Download PDF Book

What do you read on the night of Shab E Meraj?
Shab e miraj nawafils are the best prayers to pray in shab e miraj. As there are no certain prayers for the shab e meraj people pray nawafil as nawafil salat, nawafil roza, nawafil namaz, nawafil fasting etc
What is the importance of Shab E Meraj?
Shab-e-Miraj means the night of Ascent. It is the blessed night when the Holy Prophet of Islam was spiritually transported to heaven and he reached a high stage of nearness to God Almighty which is beyond ordinary human comprehension. The Ascent took place on 27th day or Rajab, 2 years before Hijra.
Why do we celebrate Shab E Meraj in Urdu?
Isra and Mi’raj, also known as Al Isra’ wal Miraj, is observed on the 27th day of the month of Rajab, the seventh month in the Islamic calendar. This event marks the night that Allah (God) took Mohammad (also known as Mohamed or Muhammed) on a journey from Mecca to Jerusalem and then to heaven.
What is Shab-e-Miraj and how is it an important day for Muslims?
Meraj was a journey by the Prophet to the heaven. In that night, archangel Gabriel came to the Prophet (s) and brought him a conveyance called Buraq and the Prophet (s) got on and moved toward Jerusalem. At the time of mounting on Buraq, it began to show disobedience and Gabriel hit it and told it, “Be calm o Buraq! Previously no prophet has ever mounted on you and in the future, no one like him would ever ride you.” After that hit, Buraq was calm and took him up which was not so high while Gabriel was with him.
What happened on Shab E Meraj?

Meraj was a journey by the Prophet to the heaven. In that night, archangel Gabriel came to the Prophet (s) and brought him a conveyance called Buraq and the Prophet (s) got on and moved toward Jerusalem. At the time of mounting on Buraq, it began to show disobedience and Gabriel hit it and told it, “Be calm o Buraq! Previously no prophet has ever mounted on you and in the future, no one like him would ever ride you.” After that hit, Buraq was calm and took him up which was not so high while Gabriel was with him.

Entering al-Aqsa Mosque In the middle of the way, the Prophet (s) stopped in Medina, mosque of Kufa, Tur Sina and Bethlehem which is the birthplace of Prophet Jesus (a) and prayed there. He (s) then entered al-Aqsa Mosque and prayed there too.

Apparently, the Prophet (s) ascended to the skies from the mosque of Qubbat al-Sakhra. The reason for naming it is the existence of a rock inside it from where the Prophet (s) ascended to the skies. In the travel log of Nasir Khusraw, it has been claimed that upon the entrance of the Prophet (s) to the mosque, that rock ascended before him and after his ascent that rock never came back to earth.
What should a Muslim do on Shab-e-Miraj?
Allah says in Quran in surah isra, that he took his Prophet from masjid haram to masjid aqsa then to 7 skies then heaven and hell. all in 1 night and there are many hadees for it proving what all our Dear Prophet has seen that proves it is sunnah you have be awake do tilawah, make dua any zikr, etc.

Leave all others who cannot comtemplate how it is sunnah, it is Allah who is witnessing in Quran (faith in Islam) what more proof this people desire. to be a sunnah.

Every act of Prophet sunnah or not?Think on the whole not just the subject,

Islam never tells you the result is just guides youIf you want to study islam you need to look on the whole,

You believe in hadees where sahabi has conveyed it, what about when Allah conveys it directly, in most highest revelation called Quran (Book of Allah).

شب معراج کو کیا پڑھتے ہیں؟
شب معراج کے نوافل شب معراج میں دعا کرنے کے لیے بہترین دعائیں ہیں۔ چونکہ شب معراج کے لیے کوئی خاص دعائیں نہیں ہیں لوگ نوافل کو نوافل نماز، نوافل روزے، نوافل نماز، نوافل روزہ وغیرہ کے طور پر پڑھتے ہیں۔
شب معراج کی کیا اہمیت ہے؟
شب معراج کا مطلب ہے طلوع کی رات۔ یہ وہ بابرکت رات ہے جب پیغمبر اسلام کو روحانی طور پر آسمان پر پہنچا دیا گیا اور وہ قرب الٰہی کے اس بلند مقام پر پہنچے جو عام انسان کی سمجھ سے باہر ہے۔ چڑھائی ہجرت سے 2 سال قبل 27 تاریخ یا رجب کو ہوئی۔
ہم شب معراج کو اردو میں کیوں مناتے ہیں؟
اسراء و معراج، جسے الاسراء وال معراج بھی کہا جاتا ہے، رجب کے مہینے کی 27 تاریخ کو منایا جاتا ہے، جو اسلامی کیلنڈر کا ساتواں مہینہ ہے۔ یہ واقعہ اس رات کی نشاندہی کرتا ہے جب اللہ (خدا) نے محمد (جنہیں محمد یا محمد بھی کہا جاتا ہے) کو مکہ سے یروشلم اور پھر جنت کے سفر پر لے لیا۔
شب معراج کیا ہے اور مسلمانوں کے لیے یہ کیسا اہم دن ہے؟
معراج نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا آسمان کی طرف سفر تھا۔ اسی رات حضرت جبرائیل علیہ السلام نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس آئے اور آپ کے لیے براق نامی گاڑی لے کر آئے اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم بیت المقدس کی طرف بڑھے۔ براق پر چڑھتے وقت اس نے نافرمانی کا مظاہرہ کرنا شروع کیا اور جبرائیل نے اسے مارا اور کہا کہ اے براق پرسکون رہو اس سے پہلے کوئی نبی تم پر سوار نہیں ہوا اور نہ آئندہ اس جیسا کوئی تم پر سوار ہو گا۔ اس مار کے بعد، براق پرسکون ہو گیا اور اسے اوپر لے گیا جو اتنا اونچا نہیں تھا جب کہ جبرائیل اس کے ساتھ تھا۔
شب معراج پر کیا ہوا؟

معراج نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا آسمان کی طرف سفر تھا۔ اسی رات حضرت جبرائیل علیہ السلام نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس آئے اور آپ کے لیے براق نامی گاڑی لے کر آئے اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم بیت المقدس کی طرف بڑھے۔ براق پر چڑھتے وقت اس نے نافرمانی کا مظاہرہ کرنا شروع کیا اور جبرائیل نے اسے مارا اور کہا کہ اے براق پرسکون رہو اس سے پہلے کوئی نبی تم پر سوار نہیں ہوا اور نہ آئندہ اس جیسا کوئی تم پر سوار ہو گا۔ اس مار کے بعد، براق پرسکون ہو گیا اور اسے اوپر لے گیا جو اتنا اونچا نہیں تھا جب کہ جبرائیل اس کے ساتھ تھا۔

مسجد اقصیٰ میں داخل ہوتے ہوئے راستے کے بیچ میں پیغمبر اکرم (ص) مدینہ منورہ، مسجد کوفہ، تور سینا اور بیت لحم میں رکے جو حضرت عیسیٰ (ع) کی جائے پیدائش ہے اور وہاں نماز ادا کی۔ پھر آپ (ص) مسجد اقصیٰ میں داخل ہوئے اور وہاں بھی نماز ادا کی۔

ظاہر ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم مسجد قبۃ الصخرہ سے آسمانوں پر تشریف لے گئے۔ اس کا نام رکھنے کی وجہ اس کے اندر ایک چٹان کا ہونا ہے جہاں سے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم آسمان پر تشریف لے گئے تھے۔ ناصر خسرو کے سفرنامے میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ مسجد نبوی میں داخل ہونے پر وہ چٹان آپ کے سامنے چڑھی اور آپ کے چڑھنے کے بعد وہ چٹان دوبارہ زمین پر نہیں آئی۔
شب معراج پر مسلمان کیا کرے؟
اللہ تعالیٰ قرآن مجید میں سورہ اسراء میں فرماتا ہے کہ وہ اپنے نبی کو مسجد حرام سے مسجد اقصیٰ تک لے گیا پھر 7 آسمانوں تک پھر جنت اور جہنم تک۔ تمام 1 رات میں اور اس کے لیے بہت سی احادیث ہیں جو ثابت کرتی ہیں کہ ہمارے تمام پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے کیا دیکھا ہے جو ثابت کرتی ہے کہ آپ کا بیدار رہنا، تلاوت کرنا، دعا کرنا، کوئی ذکر وغیرہ کرنا سنت ہے۔

باقی سب کو چھوڑ دو جو غور نہیں کر سکتے کہ یہ کیسی سنت ہے، یہ اللہ ہی ہے جو قرآن (اسلام پر ایمان) کی گواہی دے رہا ہے یہ لوگ اس سے بڑھ کر اور کیا ثبوت چاہیں گے۔ سنت ہونا۔

ہر عمل سنت نبوی ہے یا نہیں؟صرف موضوع پر نہیں بلکہ مجموعی طور پر سوچیں،

اسلام آپ کو کبھی نہیں بتاتا کہ نتیجہ صرف آپ کی رہنمائی کرتا ہے، اگر آپ اسلام کا مطالعہ کرنا چاہتے ہیں تو آپ کو مکمل طور پر دیکھنا ہوگا،

آپ حدیثوں پر یقین رکھتے ہیں جہاں صحابی نے اسے پہنچایا ہے، اس کے بارے میں کیا ہوگا جب اللہ اسے براہ راست پہنچاتا ہے، سب سے اعلی وحی قرآن (اللہ کی کتاب) میں۔